نظیر الہ بادی کے شعر

تری تصویر تو وعدے کے دن کھنچنے کے قابل ہے

کہ شرمائی ہوئی آنکھیں ہیں گھبرایا ہوا دل ہے