Saghar Mehdi's Photo'

ساغر مہدی

1936 - 1980 | بہرائج, ہندوستان

نئی غزل کے اہم شاعر

نئی غزل کے اہم شاعر

اصلی نام : سید ساغر مہدی زیدی

پیدائش : 01 Jul 1936 | بہرائج, اتر پردیش

وفات : 01 Dec 1980

خاک تھی اور جسم و جاں کہتے رہے

چند اینٹوں کو مکاں کہتے رہے

it is dust that you for a body espouse

it is few bricks and you call it a house

it is dust that you for a body espouse

it is few bricks and you call it a house

ساغر مہدی کا شمار نئی غزل کے اچھے شاعروں میں ہوتا ہے، انہوں نے زندگی کی تیزی سے بدلتی ہوئی صورتوں کو تخلیقی سطح پر جذب کیا اور شاعری میں برتا۔ ان کی پیدائش 1936کو بہرائچ (یوپی) کے ایک معزز سادات گھرانے میں ہوئی۔ مقامی گورمینٹ انٹر کالج میں تعلیم حاصل کی اور مہراج سنگھ کالج میں درس وتدریس سے وابستہ ہوگئے۔ ساغر مہدی کا بچپن بہت سی مشکلوں سے گھرا رہا۔ بچپن میں ہی ان کے والد اور والدہ کا انتقال ہوگیا، پھر ان کے ماموں بھی چل بسے۔ گھر کی ساری ذمے داریاں ساغر مہدی کے سر آگئیں۔ ساغر مہدی کی شاعری میں در آنے والا کرب ان کی نجی زندگی سے گہرے طور پر جڑا ہوا ہے۔

ساغر مہدی کے دو شعری مجموعے شائع ہوئے  ’دیوانجلی‘ اور ’حرف جاں‘۔ شاعری کے علاوہ انہوں مخلتف ادبی، تہذیبی اور سماجی مسائل پر مضامین بھی لکھے۔ ان کے مضامین کا مجموعہ ’تحریروتحلیل‘ کے نام سے شائع ہوا۔ ادبی اور تخلیقی سفر جاری ہی تھا کہ 44 سال کی عمر میں 1980  کو انتقال ہو گیا۔

موضوعات