noImage

تاب اسلم

تاب اسلم کی اشعار

غضب تو یہ ہے مقابل کھڑا ہے وہ میرے

کہ جس سے میرا تعلق ہے خوں کے رشتے کا

میں کس لیے تجھے الزام بے وفائی دوں

کہ میں تو آپ ہی پتھر ہوں اپنے رستے کا