کیا بود و باش پوچھو ہو پورب کے ساکنو

نامعلوم

کیا بود و باش پوچھو ہو پورب کے ساکنو

نامعلوم

MORE BYنامعلوم

    دلچسپ معلومات

    عوام کے درمیان یہ قطعہ میر سے منسوب ہے اور آب حیات میں اس کا ذکر بھی ہے مگر در حقیقت دوسرے تمام محققین اس بات پر متفق ہیں کہ یہ قطعہ میر کا نہیں ہے ۔

    کیا بود و باش پوچھو ہو پورب کے ساکنو

    ہم کو غریب جان کے ہنس ہنس پکار کے

    دلی جو ایک شہر تھا عالم میں انتخاب

    رہتے تھے منتخب ہی جہاں روزگار کے

    اس کو فلک نے لوٹ کے برباد کر دیا

    ہم رہنے والے ہیں اسی اجڑے دیار کے

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY