سزا یہ دی ہے کہ آنکھوں سے چھین لیں نیندیں

عامر عثمانی

سزا یہ دی ہے کہ آنکھوں سے چھین لیں نیندیں

عامر عثمانی

MORE BYعامر عثمانی

    سزا یہ دی ہے کہ آنکھوں سے چھین لیں نیندیں

    قصور یہ تھا کہ جینے کے خواب دیکھے تھے

    کسی نے ریت کے طوفاں میں لا کے چھوڑ دیا

    یہ جرم تھا کہ وفا کے سراب دیکھے تھے

    مأخذ :
    • کتاب : Ye Qadam Qadam Balaen (Pg. 170)
    • Author : Maulana Amir Usmani
    • مطبع : Markazi Maktaba Islami Publishers (2012)
    • اشاعت : 2012

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY