اس نے بولا یار چھپا کر رکھنا تم

بھاسکر شکلا

اس نے بولا یار چھپا کر رکھنا تم

بھاسکر شکلا

MORE BY بھاسکر شکلا

    اس نے بولا یار چھپا کر رکھنا تم

    ہم دونوں کا پیار چھپا کر رکھنا تم

    جو میری صورت سے ملتے جلتے ہوں

    وہ سارے اشعار چھپا کر رکھنا تم

    سیدھے ہاں مت کرنا میں مر جاؤں گا

    تھوڑا یہ اقرار چھپا کر رکھنا تم

    مشکل سے آتا ہے اور اڑ جاتا ہے

    اس ہفتے اتوار چھپا کر رکھنا تم

    بچہ ہے وہ اور بچے ضد کرتے ہیں

    بچے سے بازار چھپا کر رکھنا تم

    دو دن کو وہ ملنے آیا ہے تم سے

    دو دن یہ آزار چھپا کر رکھنا تم

    کل میری یہ غزل چھپے تو پڑھ لینا

    اور پھر وہ اخبار چھپا کر رکھنا تم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites