کروں میں کہاں تک مدارات روز

رنگیں سعادت یار خاں

کروں میں کہاں تک مدارات روز

رنگیں سعادت یار خاں

MORE BYرنگیں سعادت یار خاں

    کروں میں کہاں تک مدارات روز

    تمہیں چاہیئے ہے وہی بات روز

    مجھے گھر کے لوگوں کا ڈر ہے کمال

    کروں کس طرح سے ملاقات روز

    مرا تیرا چرچا ہے سب شہر میں

    بھلا آؤں کیونکر میں ہر رات روز

    کہاں تک سنوں کان تو اڑ گئے

    تری سنتے سنتے حکایات روز

    گئے ہیں مرے گھر میں سب تجھ کو تاڑ

    کیا کر نہ رنگیںؔ اشارات روز

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY