تھام تھام اپنے کو رکھتی ہوں بہت سا لیکن

انشا اللہ خاں انشا

تھام تھام اپنے کو رکھتی ہوں بہت سا لیکن

انشا اللہ خاں انشا

MORE BYانشا اللہ خاں انشا

    تھام تھام اپنے کو رکھتی ہوں بہت سا لیکن

    کیا کہوں تھم نہیں سکتا مرا اندر والا

    اپنے کوٹھے پہ کچھ اس ڈھب سے زفیلا کہ مری

    لے گیا جان اڑا ایک کبوتر والا

    شیدی عنبر کے جو آنے کا یہ ڈر ہے کہ کہیں

    وہ ہی قصہ نہ ہو درپیش صنوبر والا

    آدمی زادہ وہ انشاؔ ملے ان پریوں سے

    اڑ گیا ہووے نگوڑا جو کوئی پر والا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY