چڑھتی ہوئی ندی ہے کہ لہراتی ہے

فراق گورکھپوری

چڑھتی ہوئی ندی ہے کہ لہراتی ہے

فراق گورکھپوری

MORE BYفراق گورکھپوری

    چڑھتی ہوئی ندی ہے کہ لہراتی ہے

    پگھلی ہوئی بجلی ہے کہ بل کھاتی ہے

    پہلو میں لہک کے بھینچ لیتی ہے وہ جب

    کیا جانے کہاں بہا لے جاتی ہے

    مأخذ :
    • کتاب : kulliyat-e-Firaq Gorakhpuri (Pg. 413)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY