میرے کمرے کی چھت پہ ہے اس بت کا مکان

جوشؔ ملیح آبادی

میرے کمرے کی چھت پہ ہے اس بت کا مکان

جوشؔ ملیح آبادی

MORE BYجوشؔ ملیح آبادی

    INTERESTING FACT

    بمبئی میں جوش صاحب ایسے مکان میں ٹھہرے، جس میں اوپر کی منزل پر ایک ادارکارہ رہتی تھی۔ مکان کی ساخت کچھ ایسی تھی کہ انھیں دیدار نہ ہو سکتا تھا،اسی غم میں انھوں نے یہ رباعی لکھ ڈالی ۔

    میرے کمرے کی چھت پہ ہے اس بت کا مکان

    جلوے کا نہیں پھر بھی کوئی امکان

    گویا اے جوشؔ میں ہوں ایسا مزدور

    جو بھوک میں ہو سر پہ اٹھائے ہوئے خوان

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY