Nazir Fatehpuri's Photo'

نذیر فتح پوری

1946 | پونے, ہندوستان

دھرتی کو دھڑکن ملی ملا سمے کو گیان

میرے جب جب لب کھلے اٹھا کوئی طوفان

بیتے جس کی چھاؤں میں موسم کے دن رات

اپنے من کی آس کا ٹوٹ گیا وہ پات

کاغذ کو میں نے دیا شبدوں کا وردان

گیت غزل کے روپ میں مجھے ملا سمان