عشق تھا اور عقیدت سے ملا کرتے تھے

رمزی آثم

عشق تھا اور عقیدت سے ملا کرتے تھے

رمزی آثم

MORE BY رمزی آثم

    عشق تھا اور عقیدت سے ملا کرتے تھے

    پہلے ہم لوگ محبت سے ملا کرتے تھے

    روز ہی سائے بلاتے تھے ہمیں اپنی طرف

    روز ہم دھوپ کی شدت سے ملا کرتے تھے

    صرف رستہ ہی نہیں دیکھ کے خوش ہوتا تھا

    در و دیوار بھی حسرت سے ملا کرتے تھے

    اب تو ملنے کے لیے وقت نہیں ملتا ہے

    ورنہ ہم کتنی سہولت سے ملا کرتے تھے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    عشق تھا اور عقیدت سے ملا کرتے تھے نعمان شوق

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY