رنگ پیراہن کا خوشبو زلف لہرانے کا نام

فیض احمد فیض

رنگ پیراہن کا خوشبو زلف لہرانے کا نام

فیض احمد فیض

MORE BY فیض احمد فیض

    رنگ پیراہن کا خوشبو زلف لہرانے کا نام

    موسم گل ہے تمہارے بام پر آنے کا نام

    دوستو اس چشم و لب کی کچھ کہو جس کے بغیر

    گلستاں کی بات رنگیں ہے نہ مے خانے کا نام

    پھر نظر میں پھول مہکے دل میں پھر شمعیں جلیں

    پھر تصور نے لیا اس بزم میں جانے کا نام

    دلبری ٹھہرا زبان خلق کھلوانے کا نام

    اب نہیں لیتے پری رو زلف بکھرانے کا نام

    اب کسی لیلیٰ کو بھی اقرار محبوبی نہیں

    ان دنوں بدنام ہے ہر ایک دیوانے کا نام

    محتسب کی خیر اونچا ہے اسی کے فیض سے

    رند کا ساقی کا مے کا خم کا پیمانے کا نام

    ہم سے کہتے ہیں چمن والے غریبان چمن

    تم کوئی اچھا سا رکھ لو اپنے ویرانے کا نام

    فیضؔ ان کو ہے تقاضائے وفا ہم سے جنہیں

    آشنا کے نام سے پیارا ہے بیگانے کا نام

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    بھارتی وشواناتھن

    بھارتی وشواناتھن

    حبیب ولی محمد

    حبیب ولی محمد

    فردوسی بیگم

    فردوسی بیگم

    مہدی حسن

    مہدی حسن

    RECITATIONS

    اقبال بانو

    اقبال بانو

    اقبال بانو

    رنگ پیراہن کا خوشبو زلف لہرانے کا نام اقبال بانو

    مآخذ:

    • Book : Nuskha Hai Wafa (Pg. 151)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY