آنگن میں چھوڑ آئے تھے جو غار دیکھ لیں

آشفتہ چنگیزی

آنگن میں چھوڑ آئے تھے جو غار دیکھ لیں

آشفتہ چنگیزی

MORE BYآشفتہ چنگیزی

    آنگن میں چھوڑ آئے تھے جو غار دیکھ لیں

    کس حال میں ہے ان دنوں گھر بار دیکھ لیں

    جب آ گئے ہیں شہر طلسمات کے قریب

    کیا چاہتی ہے نرگس بیمار دیکھ لیں

    ہنسنا ہنسانا چھوٹے ہوئے مدتیں ہوئیں

    بس تھوڑی دور رہ گئی دیوار دیکھ لیں

    عرصے سے اس دیار کی کوئی خبر نہیں

    مہلت ملے تو آج کا اخبار دیکھ لیں

    مشکل ہے تیرا ساتھ نبھانا تمام عمر

    بکنا ہے ناگزیر تو بازار دیکھ لیں

    آشفتگی ہماری یہاں لائی بار بار

    ہے کیا ضرور تجھ کو بھی ہر بار دیکھ لیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY