اب کوئی غم ہی نہیں ہے جو رلائے مجھ کو

علی عمران

اب کوئی غم ہی نہیں ہے جو رلائے مجھ کو

علی عمران

MORE BYعلی عمران

    اب کوئی غم ہی نہیں ہے جو رلائے مجھ کو

    ایسا موسم ہی نہیں ہے جو رلائے مجھ کو

    زخم میں درد نہیں ہے جو اٹھائے ٹیسیں

    آنکھ میں نم ہی نہیں ہے جو رلائے مجھ کو

    چاند ناراض نہیں ہے نہ ستارے ہیں خفا

    رات برہم ہی نہیں ہے جو رلائے مجھ کو

    مجھ میں سب کچھ ہی مکمل ہے تو کس بات کا دکھ

    کچھ کہیں کم ہی نہیں ہے جو رلائے مجھ کو

    تیرے ہونٹوں سے مرے زخم چہک اٹھیں گے

    یہ وہ مرہم ہی نہیں ہے جو رلائے مجھ کو

    اے مرے خواب تو ٹوٹے میں نہیں ٹوٹوں گا

    تجھ میں وہ دم ہی نہیں ہے جو رلائے مجھ کو

    تیرے جانے پہ بھی افسردہ نہیں ہے کوئی

    تیرا ماتم ہی نہیں ہے جو رلائے مجھ کو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY