اے دل وہ عاشقی کے فسانے کدھر گئے

اختر شیرانی

اے دل وہ عاشقی کے فسانے کدھر گئے

اختر شیرانی

MORE BY اختر شیرانی

    اے دل وہ عاشقی کے فسانے کدھر گئے

    وہ عمر کیا ہوئی وہ زمانے کدھر گئے

    ویراں ہیں صحن و باغ بہاروں کو کیا ہوا

    وہ بلبلیں کہاں وہ ترانے کدھر گئے

    ہے نجد میں سکوت ہواؤں کو کیا ہوا

    لیلائیں ہیں خموش دوانے کدھر گئے

    اجڑے پڑے ہیں دشت غزالوں پہ کیا بنی

    سونے ہیں کوہسار دوانے کدھر گئے

    وہ ہجر میں وصال کی امید کیا ہوئی

    وہ رنج میں خوشی کے بہانے کدھر گئے

    دن رات مے کدے میں گزرتی تھی زندگی

    اخترؔ وہ بے خودی کے زمانے کدھر گئے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY