اے ہوائے دیار درد و ملال

رفیق راز

اے ہوائے دیار درد و ملال

رفیق راز

MORE BYرفیق راز

    اے ہوائے دیار درد و ملال

    مرحبا مرحبا تعال تعال

    لفظ گم سم ہیں اور ان میں ہے غم

    میری خاموشیوں کا جاہ و جلال

    عقل سے کسب روشنی کر کے

    ملک دل ہو گیا ہے رو بہ زوال

    تو بھی اس میں ہے تیری دنیا بھی

    کتنا گہرا ہے سوچ کا پاتال

    پکی سڑکوں پہ یاد آتا ہے

    کچے رستوں کا سبزۂ‌ پامال

    کس پہ اب ہے چنار کا سایہ

    ایں جیراننا و کیف الحال

    کھول دیوان حافظ شیراز

    فال تو اب رفیق راز نکال

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے