اکیلے ہیں وہ اور جھنجھلا رہے ہیں

خمارؔ بارہ بنکوی

اکیلے ہیں وہ اور جھنجھلا رہے ہیں

خمارؔ بارہ بنکوی

MORE BY خمارؔ بارہ بنکوی

    اکیلے ہیں وہ اور جھنجھلا رہے ہیں

    مری یاد سے جنگ فرما رہے ہیں

    یہ کیسی ہوائے ترقی چلی ہے

    دیے تو دیے دل بجھے جا رہے ہیں

    الٰہی مرے دوست ہوں خیریت سے

    یہ کیوں گھر میں پتھر نہیں آ رہے ہیں

    بہشت تصور کے جلوے ہیں میں ہوں

    جدائی سلامت مزے آ رہے ہیں

    قیامت کے آنے میں رندوں کو شک تھا

    جو دیکھا تو واعظ چلے آ رہے ہیں

    بہاروں میں بھی مے سے پرہیز توبہ

    خمارؔ آپ کافر ہوئے جا رہے ہیں

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    خمارؔ بارہ بنکوی

    خمارؔ بارہ بنکوی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY