اپنے آنچل میں چھپا کر مرے آنسو لے جا

اظہر عنایتی

اپنے آنچل میں چھپا کر مرے آنسو لے جا

اظہر عنایتی

MORE BY اظہر عنایتی

    اپنے آنچل میں چھپا کر مرے آنسو لے جا

    یاد رکھنے کو ملاقات کے جگنو لے جا

    میں جسے ڈھونڈنے نکلا تھا اسے پا نہ سکا

    اب جدھر جی ترا چاہے مجھے خوشبو لے جا

    آ ذرا دیر کو اور مجھ سے ملاقات کے بعد

    سوچنے کے لیے روشن کوئی پہلو لے جا

    حادثے اونچی اڑانوں میں بہت ہوتے ہیں

    تجربہ تجھ کو نہیں ہے مرے بازو لے جا

    جو بھی اب ہاتھ ملاتا ہے تجھے پوچھتا ہے

    آ مرے ہاتھوں سے یہ لمس کی خوشبو لے جا

    لوگ اس شہر میں کیا جانے ہوں کیسے کیسے

    میرا لہجہ مرے اخلاص کا جادو لے جا

    RECITATIONS

    فہد حسین

    فہد حسین

    فہد حسین

    اپنے آنچل میں چھپا کر مرے آنسو لے جا فہد حسین

    مآخذ:

    • کتاب : jhunka na-e-mausam kaa (Pg. 178)

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY