اپنی صورت کو بدلنا ہی نہیں چاہتا میں

سرفراز خالد

اپنی صورت کو بدلنا ہی نہیں چاہتا میں

سرفراز خالد

MORE BYسرفراز خالد

    اپنی صورت کو بدلنا ہی نہیں چاہتا میں

    اب کسی سانچے میں ڈھلنا ہی نہیں چاہتا میں

    تم اگر مجھ سے محبت نہیں کرتے نہ سہی

    ایسی باتوں سے بہلنا ہی نہیں چاہتا میں

    یا مرے پاؤں میں قوت ہی نہیں ہے اتنی

    یا تری راہ پہ چلنا ہی نہیں چاہتا میں

    سنتا رہتا ہوں صدائیں تری دستک کی مگر

    اپنے کمرے سے نکلنا ہی نہیں چاہتا میں

    یہ بھی سچ ہے کہ سنبھلنا ہے ضروری میرا

    یہ بھی سچ ہے کہ سنبھلنا ہی نہیں چاہتا میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY