بادشاہوں کی طرح اور نہ وزیروں کی طرح

شکیل شمسی

بادشاہوں کی طرح اور نہ وزیروں کی طرح

شکیل شمسی

MORE BYشکیل شمسی

    بادشاہوں کی طرح اور نہ وزیروں کی طرح

    ہم تو درویش تھے آئے یہاں پیروں کی طرح

    راج محلوں میں کہاں ڈھونڈھ رہے ہو ہم کو

    ہم تو اجمیر میں رہتے ہیں فقیروں کی طرح

    ہم بھی اس ملک کی تقدیر کا اک حصہ ہیں

    ہم نہ مٹ پائیں گے ہاتھوں کی لکیروں کی طرح

    جانفشانی سے بہت ہم نے جڑے ہیں آنسو

    مادر ہند ترے تاج میں ہیروں کی طرح

    دشمنوں کو تو یہی بات بہت کھلتی ہے

    ہم تو غربت میں بھی زندہ ہیں امیروں کی طرح

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY