برابر سے بچ کر گزر جانے والے

جگر مراد آبادی

برابر سے بچ کر گزر جانے والے

جگر مراد آبادی

MORE BYجگر مراد آبادی

    برابر سے بچ کر گزر جانے والے

    یہ نالے نہیں بے اثر جانے والے

    نہیں جانتے کچھ کہ جانا کہاں ہے

    چلے جا رہے ہیں مگر جانے والے

    مرے دل کی بیتابیاں بھی لیے جا

    دبے پاؤں منہ پھیر کر جانے والے

    ترے اک اشارے پہ ساکت کھڑے ہیں

    نہیں کہہ کے سب سے گزر جانے والے

    محبت میں ہم تو جیے ہیں جئیں گے

    وہ ہوں گے کوئی اور مر جانے والے

    RECITATIONS

    خالد مبشر

    خالد مبشر

    خالد مبشر

    برابر سے بچ کر گزر جانے والے خالد مبشر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY