برق سے آشیاں کا رشتہ ہے

اختر ضیائی

برق سے آشیاں کا رشتہ ہے

اختر ضیائی

MORE BYاختر ضیائی

    برق سے آشیاں کا رشتہ ہے

    عرش سے خاکداں کا رشتہ ہے

    میرے افسانۂ محبت سے

    آپ کی داستاں کا رشتہ ہے

    آج کل ہم جنوں پسندوں سے

    ہر نئے امتحاں کا رشتہ ہے

    اہل گلشن کی خستہ حالی سے

    سازش باغباں کا رشتہ ہے

    آپ مختار اور ہم مجبور

    سوچئے تو کہاں کا رشتہ ہے

    شیخ صاحب کا حور و غلماں سے

    صرف وہم و گماں کا رشتہ ہے

    ان کا اخترؔ سے یوں تعلق ہے

    جس طرح جسم و جاں کا رشتہ ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY