چلو کچھ تو راہ طے ہو نہ چلے تو بھول ہوگی

اعزاز افصل

چلو کچھ تو راہ طے ہو نہ چلے تو بھول ہوگی

اعزاز افصل

MORE BYاعزاز افصل

    چلو کچھ تو راہ طے ہو نہ چلے تو بھول ہوگی

    ابھی بند ہر گلی ہے جو کھلے گی طول ہوگی

    ترے حسن کی ودیعت مری جرأت نظارہ

    ترے رو بہ رو جھکے گی تو نظر کی بھول ہوگی

    مرے ہم سفر بڑھیں گے مجھے راستہ بتا کر

    مرے پاؤں سے اڑی ہے مرے سر پہ دھول ہوگی

    مجھے قبلہ رو بٹھا کر مرے ہاتھ اٹھانے والو

    یہ یقین بھی دلا دو کہ دعا قبول ہوگی

    چلو مان لیں یہ دونوں کوئی شے ہے مصلحت بھی

    نہ ستم کا دل دکھے گا نہ وفا ملول ہوگی

    ترا فن قصہ گوئی ابھی دار تک ہی پہنچا

    مرے شوق کی کہانی ابھی اور طول ہوگی

    وہ لہو کی دھار افضلؔ جو ہے قرض خنجروں پر

    نہ کریں گے ہم تقاضا نہ کبھی وصول ہوگی

    مأخذ :
    • کتاب : Kalam-e-aizaz afzal (Pg. 183)
    • Author : Aizaz Afzal
    • مطبع : Usmania Book Depot

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY