چلتے ہو تو چمن کو چلئے کہتے ہیں کہ بہاراں ہے

میر تقی میر

چلتے ہو تو چمن کو چلئے کہتے ہیں کہ بہاراں ہے

میر تقی میر

MORE BYمیر تقی میر

    چلتے ہو تو چمن کو چلئے کہتے ہیں کہ بہاراں ہے

    پات ہرے ہیں پھول کھلے ہیں کم کم باد و باراں ہے

    رنگ ہوا سے یوں ٹپکے ہے جیسے شراب چواتے ہیں

    آگے ہو مے خانے کے نکلو عہد بادہ گساراں ہے

    عشق کے میداں داروں میں بھی مرنے کا ہے وصف بہت

    یعنی مصیبت ایسی اٹھانا کار کار گزاراں ہے

    دل ہے داغ جگر ہے ٹکڑے آنسو سارے خون ہوئے

    لوہو پانی ایک کرے یہ عشق لالہ عذاراں ہے

    کوہ کن و مجنوں کی خاطر دشت و کوہ میں ہم نہ گئے

    عشق میں ہم کو میرؔ نہایت پاس عزت داراں ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    اقبال بانو

    اقبال بانو

    ایم کلیم

    ایم کلیم

    مہدی حسن

    مہدی حسن

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY