درد دل پاس وفا جذبۂ ایماں ہونا

چکبست برج نرائن

درد دل پاس وفا جذبۂ ایماں ہونا

چکبست برج نرائن

MORE BY چکبست برج نرائن

    INTERESTING FACT

    The sher "Zindagi kya hai anaasir mein..." of this ghazal shows the unrivalled description of life and death. This sher was also shown as the theme of the film Masaan (2015).

    درد دل پاس وفا جذبۂ ایماں ہونا

    آدمیت ہے یہی اور یہی انساں ہونا

    نو گرفتار بلا طرز وفا کیا جانیں

    کوئی نا شاد سکھا دے انہیں نالاں ہونا

    روکے دنیا میں ہے یوں ترک ہوس کی کوشش

    جس طرح اپنے ہی سائے سے گریزاں ہونا

    زندگی کیا ہے عناصر میں ظہور ترتیب

    موت کیا ہے انہیں اجزا کا پریشاں ہونا

    دفتر حسن پہ مہر ید قدرت سمجھو

    پھول کا خاک کے تودے سے نمایاں ہونا

    دل اسیری میں بھی آزاد ہے آزادوں کا

    ولولوں کے لیے ممکن نہیں زنداں ہونا

    گل کو پامال نہ کر لعل و گہر کے مالک

    ہے اسے طرۂ دستار غریباں ہونا

    ہے مرا ضبط جنوں جوش جنوں سے بڑھ کر

    ننگ ہے میرے لیے چاک گریباں ہونا

    قید یوسف کو زلیخا نے کیا کچھ نہ کیا

    دل یوسف کے لیے شرط تھا زنداں ہونا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY