درد حیات عشق ہے نغمۂ جاں گداز میں

رام کرشن مضطر

درد حیات عشق ہے نغمۂ جاں گداز میں

رام کرشن مضطر

MORE BYرام کرشن مضطر

    درد حیات عشق ہے نغمۂ جاں گداز میں

    غرق ہے ساری کائنات لذت سوز و ساز میں

    شوق کا حال کیا ہوا دل کا مآل کیا ہوا

    ایک جہان راز ہے دیدۂ دل نواز میں

    کیف خود آگہی بھی ہے عالم بے خودی بھی ہے

    شوق سپردگی بھی ہے آج نگاہ ناز میں

    پچھلے پہر جو حسن کے رخ سے ہٹیں خنک لٹیں

    جاگ اٹھا نیا فسوں چشم‌ فسوں طراز میں

    آہ وہ عالم شباب ہائے وہ نشۂ شراب

    جھلکا ہوا وہ رنگ خواب نرگس نیم باز میں

    مآخذ :
    • Raqs-e-bahar

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY