دشت میں مثل صدا کے تھے

ہربنس سنگھ تصور

دشت میں مثل صدا کے تھے

ہربنس سنگھ تصور

MORE BYہربنس سنگھ تصور

    دشت میں مثل صدا کے تھے

    کیا کیا نقش وفا کے تھے

    توڑ گئے جو کعبۂ دل

    بندے خاص خدا کے تھے

    سال مہینے دن اور رات

    جھونکے چار ہوا کے تھے

    مجھ بے گھر کے پاس رہے

    جتنے سیل بلا کے تھے

    میں بھی تصورؔ ان میں تھا

    جن کے تیر خطا کے تھے

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY