دل ہے کہ محبت میں اپنا نہ پرایا ہے

نشور واحدی

دل ہے کہ محبت میں اپنا نہ پرایا ہے

نشور واحدی

MORE BY نشور واحدی

    دل ہے کہ محبت میں اپنا نہ پرایا ہے

    کچھ سوچ کے اس نے بھی دیوانہ بنایا ہے

    جو وقت کہ گزرا ہے جذبات کے کوچے میں

    کچھ راس نہیں آیا کچھ راس بھی آیا ہے

    آساں نہیں یہ آنسو آیا ہے جو پلکوں پر

    رگ رگ سے لہو لے کر دیپک یہ جلایا ہے

    اک ربط حسیں دیکھا بے ربطیٔ عالم میں

    ہنگامہ سہی لیکن ہنگامہ سجایا ہے

    پہچان لیے ہم نے تیور غم دوراں کے

    دنیا میں رہا لیکن دھوکا نہیں کھایا ہے

    رہبر ہو کہ شاعر ہو کیا اپنی خبر اس کو

    خود کچھ بھی نہیں سیکھا دنیا کو سکھایا ہے

    نغمہ ہے نشورؔ اپنا افسردۂ غم لیکن

    احساس کی محفل میں کچھ رنگ تو آیا ہے

    مآخذ:

    • کتاب : Sawad-e-manzil (Pg. 255)
    • Author : Nushoor wahedi
    • مطبع : Sarvat Wahidi D/o Nushoor wahedi (2009)
    • اشاعت : 2009

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY