دل میں تجھ کو شمار کر لوں میں

فیض راحیل خان

دل میں تجھ کو شمار کر لوں میں

فیض راحیل خان

MORE BYفیض راحیل خان

    دل میں تجھ کو شمار کر لوں میں

    ہو اجازت تو پیار کر لوں میں

    اس خزاں کو سمیٹ لو تم تو

    موسم خوش گوار کر لوں میں

    عشق اگر جرم ہے تو جرم صنم

    بے سبب بے شمار کر لوں میں

    تم نے وعدہ کیا ہے آنے کا

    دو گھڑی انتظار کر لوں میں

    ساری دنیا کو جیت لوں پل میں

    تجھ پہ گر افتخار کر لوں میں

    ہاتھ حاصل سے پھر ملاؤں گا

    پہلے دریا تو پار کر لوں میں

    کیا ملاقات پھر کبھی ہوگی

    یا اسے یادگار کر لوں میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY