ڈوب کر بھی نہ پڑا فرق گراں جانی میں

عباس تابش

ڈوب کر بھی نہ پڑا فرق گراں جانی میں

عباس تابش

MORE BYعباس تابش

    ڈوب کر بھی نہ پڑا فرق گراں جانی میں

    میں ہوں پتھر کی طرح بہتے ہوئے پانی میں

    یہ محبت تو بہت بعد کا قصہ ہے میاں

    میں نے اس ہاتھ کو پکڑا تھا پریشانی میں

    رفتگاں تم نے عبث ڈھونگ رچایا ورنہ

    عشق کو دخل نہیں موت کی ارزانی میں

    یہ محبت بھی ولایت کی طرح رکھتی ہے

    حالت حال میں یہ حالت حیرانی میں

    اس لیے جل کے کبھی راکھ نہیں ہوتا دل

    یہ کبھی آگ میں ہوتا ہے کبھی پانی میں

    اک محبت ہی پہ موقوف نہیں ہے تابشؔ

    کچھ بڑے فیصلے ہو جاتے ہیں نادانی میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے