ایک مدت سے جو سینے میں بسا ہے کیا ہے

عبید الرحمان

ایک مدت سے جو سینے میں بسا ہے کیا ہے

عبید الرحمان

MORE BYعبید الرحمان

    ایک مدت سے جو سینے میں بسا ہے کیا ہے

    کرب احساس ہے یا کرب انا ہے کیا ہے

    دور حاضر میں ہر اک شخص ہے کیوں سہما ہوا

    دل میں جو خوف ہے وہ خوف فنا ہے کیا ہے

    مجھ کو اس لفظ کا مفہوم بتا دو یارو

    دوستی نام ہے جس کا وہ جفا ہے کیا ہے

    بات مطلب کی کہوں اس سے مگر پہلے ذرا

    یہ تو معلوم ہو وہ خوش ہے خفا ہے کیا ہے

    اس قدر رنج و الم اتنے مصائب توبہ

    زندگی سلسلۂ آہ و بکا ہے کیا ہے

    جو گرفتار ہوا اس میں الجھتا ہی گیا

    زلف جاناں بھی کوئی دام بلا ہے کیا ہے

    کتنی ہی بار یہ چاہا کہ ذرا دیکھوں تو

    اس کی آنکھوں میں جو اک نام لکھا ہے کیا ہے

    مآخذ :
    • کتاب : Aawaz Ke Saye (Poetry) (Pg. 27)
    • Author : Obaidur Rahman
    • مطبع : Sehla Obaid (2001)
    • اشاعت : 2001

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY