فرعون وقت کوئی بھی ہو سرکشی کرو

اجمل اجملی

فرعون وقت کوئی بھی ہو سرکشی کرو

اجمل اجملی

MORE BYاجمل اجملی

    فرعون وقت کوئی بھی ہو سرکشی کرو

    یاران شہر میری طرح زندگی کرو

    امرت نہیں نصیب تو زہراب ہی سہی

    کچھ تو علاج شدت تشنہ لبی کرو

    یہ ظلمت تمام مسلسل نہیں قبول

    دل کا لہو بلا سے جلے روشنی کرو

    منہ دیکھی دوستی سے اب اکتا گیا ہے دل

    یارو کرو خلوص سے گو دشمنی کرو

    ہم ہر نفس کھلائیں گے اپنے لہو سے پھول

    تم اہتمام دار و رسن ہر گھڑی کرو

    ہر شعر آبگینہ ہے موج خیال کا

    لو کام احتیاط سے جب شاعری کرو

    کلیاں کھلانے آئے گا جھونکا نسیم کا

    تم راہ میں ہزار فصیلیں کھڑی کرو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY