ہم کو مٹا سکے یہ زمانے میں دم نہیں

جگر مراد آبادی

ہم کو مٹا سکے یہ زمانے میں دم نہیں

جگر مراد آبادی

MORE BY جگر مراد آبادی

    ہم کو مٹا سکے یہ زمانے میں دم نہیں

    ہم سے زمانہ خود ہے زمانے سے ہم نہیں

    بے فائدہ الم نہیں بے کار غم نہیں

    توفیق دے خدا تو یہ نعمت بھی کم نہیں

    میری زباں پہ شکوۂ اہل ستم نہیں

    مجھ کو جگا دیا یہی احسان کم نہیں

    یا رب ہجوم درد کو دے اور وسعتیں

    دامن تو کیا ابھی مری آنکھیں بھی نم نہیں

    شکوہ تو ایک چھیڑ ہے لیکن حقیقتاً

    تیرا ستم بھی تیری عنایت سے کم نہیں

    اب عشق اس مقام پہ ہے جستجو نورد

    سایہ نہیں جہاں کوئی نقش قدم نہیں

    ملتا ہے کیوں مزہ ستم روزگار میں

    تیرا کرم بھی خود جو شریک ستم نہیں

    مرگ جگرؔ پہ کیوں تری آنکھیں ہیں اشک ریز

    اک سانحہ سہی مگر اتنا اہم نہیں

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    بیگم اختر

    بیگم اختر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY