ہمیں ملا نہ کبھی سوز زندگی سے فراغ

جمیل الدین عالی

ہمیں ملا نہ کبھی سوز زندگی سے فراغ

جمیل الدین عالی

MORE BYجمیل الدین عالی

    ہمیں ملا نہ کبھی سوز زندگی سے فراغ

    اگر بجھا ہے کہیں دل تو جل اٹھا ہے دماغ

    وہی حیات جو نیرنگ خار و گل ہے کبھی

    کبھی کھلائے تمنا ہے جو نہ دشت نہ باغ

    جہاں بھی کھوئے گئے قافلے ارادوں کے

    وہیں سے مجھ کو ملا تیری انجمن کا سراغ

    گزر رہی ہے عجب طرح زندگی عالیؔ

    نہ بجھ رہا ہے چراغ اور نہ جل رہا ہے چراغ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY