ہمیں سب اہل ہوس ناپسند رکھتے ہیں

احمد مشتاق

ہمیں سب اہل ہوس ناپسند رکھتے ہیں

احمد مشتاق

MORE BYاحمد مشتاق

    ہمیں سب اہل ہوس ناپسند رکھتے ہیں

    کہ ہم نوائے محبت بلند رکھتے ہیں

    اسی لیے تو خفا ہیں ستم شعار کہ ہم

    نگاہ نرم و دل دردمند رکھتے ہیں

    اگرچہ دل وہی رجعت پسند ہے اپنا

    مگر زبان ترقی پسند رکھتے ہیں

    ہم ایسے عرش نشینوں سے وہ درخت اچھے

    جو آندھیوں میں بھی سر کو بلند رکھتے ہیں

    چلے ہو دیکھنے مشتاقؔ جن کو پچھلی رات

    وہ لوگ شام سے دروازہ بند رکھتے ہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق,

    نعمان شوق

    ہمیں سب اہل ہوس ناپسند رکھتے ہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے