حق بات ہی کہیں گے سر دار دیکھنا

راغب مرادآبادی

حق بات ہی کہیں گے سر دار دیکھنا

راغب مرادآبادی

MORE BYراغب مرادآبادی

    حق بات ہی کہیں گے سر دار دیکھنا

    اہل قلم کی جرأت اظہار دیکھنا

    دیکھیں جنہیں ہیں دیر کے دیوار و در عزیز

    ہم کو تو صرف سوئے در یار دیکھنا

    کرتا رہا قلم یوں ہی شاخیں جو باغباں

    ناپید ہوگا سایۂ اشجار دیکھنا

    سرکار آپ پر جو چھڑکتے ہیں جان آج

    بچ کر چلیں گے کل یہ نمک خوار دیکھنا

    بنیاد جس کی ہے ہوس اقتدار پر

    ہونے کو ہے وہ قلعہ بھی مسمار دیکھنا

    ڈالا جو تم نے ہاتھ کلاہ عوام پر

    لگ جائیں گے سروں کے بھی انبار دیکھنا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY