ہونے لگتی ہے دل و جاں میں جلن رات ڈھلے

سوہن راہی

ہونے لگتی ہے دل و جاں میں جلن رات ڈھلے

سوہن راہی

MORE BYسوہن راہی

    ہونے لگتی ہے دل و جاں میں جلن رات ڈھلے

    جب بھی لو دیتے ہیں خوابوں کے بدن رات ڈھلے

    ہنستی کلیوں نے تو سنگار کیا تھا لیکن

    جل بجھا کیوں ترے وعدوں کا چمن رات ڈھلے

    نور ہے دیدۂ دل میں تو ذرا غور سے دیکھ

    زخم کے چاند کو لگتا ہے گہن رات ڈھلے

    چاندنی رات کے تابوت میں رکھ دے اس کو

    دل نے پہنا ہے اندھیروں کا کفن رات ڈھلے

    ڈھلتی جاتی ہے نگاہوں کے پیالوں میں شراب

    جب بھی دو جسموں کا ہوتا ہے ملن رات ڈھلے

    گنگنا اٹھتا ہے تنہائی کا کنگن راہی

    جاگتی ہے جوں ہی یادوں کی دلہن رات ڈھلے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY