اس طرح ہم کو جا بہ جا کیجے

نذیر نظر

اس طرح ہم کو جا بہ جا کیجے

نذیر نظر

MORE BYنذیر نظر

    اس طرح ہم کو جا بہ جا کیجے

    اپنی یادوں میں مبتلا کیجے

    سب ہی مطلب کے یار ہیں جاناں

    کوئی اپنا نہیں ہے کیا کیجے

    عشق والوں کی شرط ایسی ہے

    اپنی صورت کو چاند سا کیجے

    فون پر بات خوب کر لی ہے

    اب تو ملنے کا حوصلہ کیجے

    کوئی تو حل ضرور نکلے گا

    تلخ موضوع پہ مشورہ کیجے

    زندگی کہتے اک تماشا ہے

    اپنا کردار بس ادا کیجے

    ہم نے بس اک امید باندھی ہے

    کم سے کم آپ کچھ نیا کیجے

    مل کے ہجر و وصال سہنا ہے

    ہم سفر اپنا ہم نوا کیجے

    اپنا مفہوم آپ کو دوں گا

    آپ بس شیر کہہ دیا کیجے

    مأخذ :
    • کتاب : Word File Mail By Salim Saleem

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY