عشق میں کچھ اس طرح دیوانگی چھائی کہ بس

سید مبین علوی خیرآبادی

عشق میں کچھ اس طرح دیوانگی چھائی کہ بس

سید مبین علوی خیرآبادی

MORE BYسید مبین علوی خیرآبادی

    عشق میں کچھ اس طرح دیوانگی چھائی کہ بس

    کوچۂ ارباب دل سے یہ صدا آئی کہ بس

    جب قدم دیوانگی کی حد سے آگے بڑھ گئے

    دیکھنے والوں کو مجھ پر وہ ہنسی آئی کہ بس

    بوئے مشکیں مسکرائی پھول خوشبو لے اڑے

    اس سراپا ناز کی یوں زلف لہرائی کہ بس

    دیکھ کر وہ بانکپن وہ حسن وہ رنگیں شباب

    دل کی حسرت نے بھی آخر لی وہ انگڑائی کہ بس

    ہم سے کچھ بھی ہو نہ پائی احتیاط دلبری

    اپنی کوتاہی پہ ایسی آنکھ شرمائی کہ بس

    لے کے ساغر ہاتھ میں ہم چل پڑے جب اے مبینؔ

    میکدے میں اک فضا کچھ ایسی لہرائی کہ بس

    مآخذ:

    • کتاب : Pirahn-e-harf (Pg. 90)
    • Author : Mubeen Alvi Khairabadi
    • مطبع : Mubeen Alvi Khairabadi (1999)
    • اشاعت : 1999

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY