عشق سے بچ کے کدھر جائیں گے ہم

رنگیں سعادت یار خاں

عشق سے بچ کے کدھر جائیں گے ہم

رنگیں سعادت یار خاں

MORE BYرنگیں سعادت یار خاں

    عشق سے بچ کے کدھر جائیں گے ہم

    ہے یہ موجود جدھر جائیں گے ہم

    تن کے بس رکھئے قبضہ پر ہاتھ

    دیکھیے مفت میں ڈر جائیں گے ہم

    تیری دہلیز پر اپنے سر کو

    ایک دن کاٹ کے دھر جائیں گے ہم

    وہ یہ کہتے ہیں نہ دے دل ہم کو

    دیکھ لیتے ہی مکر جائیں گے ہم

    منع کرتے ہو عبث یارو آج

    اس کے گھر جائیں گے پر جائیں گے ہم

    دل کی لینی ہے خبر ہم کو ضرور

    آج تو پھر بھی ادھر جائیں گے ہم

    دم کہیں لیں گے نہ پھر تا بہ عدم

    تیرے کوچہ سے اگر جائیں گے ہم

    تو نہ گزرے گا جفا سے ظالم

    جان سے اپنی گزر جائیں گے ہم

    زیست باقی ہے تو اپنا رنگیںؔ

    نام اس عشق میں کر جائیں گے ہم

    مآخذ:

    • کتاب : intekhaab-e-sukhan(avval) (Pg. 70)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY