جو اپنی ہے وہ خاک دل نشیں ہی کام آئے گی

ظفر گورکھپوری

جو اپنی ہے وہ خاک دل نشیں ہی کام آئے گی

ظفر گورکھپوری

MORE BYظفر گورکھپوری

    جو اپنی ہے وہ خاک دل نشیں ہی کام آئے گی

    گروگے آسماں سے جب زمیں ہی کام آئے گی

    یہاں سے مت اٹھا بستر کہ اس سفاک آندھی میں

    یہ ٹوٹی پھوٹی دیوار یقیں ہی کام آئے گی

    اٹھا رکھا تھا صحرا سر پہ تم نے کون مانے گا

    جھٹکنا مت کہ یہ گرد جبیں ہی کام آئے گی

    وہ دن آئے گا جب سارے سمندر سوکھ جائیں گے

    میاں اندر کی جوئے آتشیں ہی کام آئے گی

    کوئی آنکھوں کے شعلے پونچھنے والا نہیں ہوگا

    ظفرؔ صاحب یہ گیلی آستیں ہی کام آئے گی

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نامعلوم

    نامعلوم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY