کبھی تو شام ڈھلے اپنے گھر گئے ہوتے

بشیر بدر

کبھی تو شام ڈھلے اپنے گھر گئے ہوتے

بشیر بدر

MORE BY بشیر بدر

    کبھی تو شام ڈھلے اپنے گھر گئے ہوتے

    کسی کی آنکھ میں رہ کر سنور گئے ہوتے

    سنگار دان میں رہتے ہو آئنے کی طرح

    کسی کے ہاتھ سے گر کر بکھر گئے ہوتے

    غزل نے بہتے ہوئے پھول چن لیے ورنہ

    غموں میں ڈوب کر ہم لوگ مر گئے ہوتے

    عجیب رات تھی کل تم بھی آ کے لوٹ گئے

    جب آ گئے تھے تو پل بھر ٹھہر گئے ہوتے

    بہت دنوں سے ہے دل اپنا خالی خالی سا

    خوشی نہیں تو اداسی سے بھر گئے ہوتے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites