کہنے سننے سے مری ان کی عداوت ہو گئی

منشی امیر اللہ تسلیم

کہنے سننے سے مری ان کی عداوت ہو گئی

منشی امیر اللہ تسلیم

MORE BYمنشی امیر اللہ تسلیم

    کہنے سننے سے مری ان کی عداوت ہو گئی

    جو نہ ہونی تھی وہ غیروں کی بدولت ہو گئی

    روز آتی ہے مگر اک روز بھی آتی نہیں

    اے اجل تو بھی مرے حق میں قیامت ہو گئی

    میرے ان کے اب کہاں پہلا تپاک عاشقی

    چلتے پھرتے مل گئے صاحب سلامت ہو گئی

    سمجھے تھے دشت جنوں میں کچھ بہل جائے گا دل

    دیکھ کر سنسان جنگل دونی وحشت ہو گئی

    شکل دکھلاتی نہیں شیشہ سے آ کے جام میں

    دختر رز تو تو ابھی سے بے مروت ہو گئی

    مرگ عاشق کا عبث ہے سوگ ہر دم اس قدر

    چھٹ گیا وہ قید غم سے تم کو فرصت ہو گئی

    فصل گل آئی بڑھے جوش جنوں کے ولولے

    پھر وحی تسلیمؔ اپنی غیر حالت ہو گئی

    مأخذ :
    • کتاب : Ghazal Usne Chhedi(3) (Pg. 170)
    • Author : Farhat Ehsas
    • مطبع : Rekhta Books (2017)
    • اشاعت : 2017

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے