خاک زادہ ہوں مگر تا بہ فلک جاتا ہے

شہباز خواجہ

خاک زادہ ہوں مگر تا بہ فلک جاتا ہے

شہباز خواجہ

MORE BYشہباز خواجہ

    خاک زادہ ہوں مگر تا بہ فلک جاتا ہے

    میرا ادراک بہت دور تلک جاتا ہے

    تیری نسبت کو چھپاتا تو بہت ہوں لیکن

    تیرا چہرہ مری آنکھوں سے جھلک جاتا ہے

    اک حقیقت سے ابھر آتا ہے ہر شے کا وجود

    ایک جگنو سے اندھیرا بھی چمک جاتا ہے

    یوں تو ممکن نہیں دشمن مرے سر پر پہنچے

    پہرے داروں میں کوئی آنکھ جھپک جاتا ہے

    میں فقط خاک پہ رکھتا ہوں جبیں کو شہبازؔ

    آسماں خود ہی مری سمت سرک جاتا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY