خبر تو دور امین خبر نہیں آئے

آشفتہ چنگیزی

خبر تو دور امین خبر نہیں آئے

آشفتہ چنگیزی

MORE BY آشفتہ چنگیزی

    خبر تو دور امین خبر نہیں آئے

    بہت دنوں سے وہ لشکر ادھر نہیں آئے

    یہ بات یاد رکھیں گے تلاشنے والے

    جو اس سفر پہ گئے لوٹ کر نہیں آئے

    طلسم اونگھتی راتوں کا توڑنے والے

    وہ مخبران سحر پھر نظر نہیں آئے

    ضرور تجھ سے بھی اک روز اوب جائیں گے

    خدا کرے کہ تری رہ گزر نہیں آئے

    سوال کرتی کئی آنکھیں منتظر ہیں یہاں

    جواب آج بھی ہم سوچ کر نہیں آئے

    اداس سونی سی چھت اور دو بجھی آنکھیں

    کئی دنوں سے پھر آشفتہؔ گھر نہیں آئے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    خبر تو دور امین خبر نہیں آئے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY