کس دل سے ترک لذت دنیا کرے کوئی

یگانہ چنگیزی

کس دل سے ترک لذت دنیا کرے کوئی

یگانہ چنگیزی

MORE BYیگانہ چنگیزی

    کس دل سے ترک لذت دنیا کرے کوئی

    وہ خواب دل فریب کہ دیکھا کرے کوئی

    کیا سہل ہے کہ ترک تماشا کرے کوئی

    دل سے نہ ہو تو آنکھ سے توبہ کرے کوئی

    غنچے کے دل میں کچھ نہ تھا اک آہ کے سوا

    پھر کیا شگفتگی کی تمنا کرے کوئی

    آنکھیں ہوں جس کے آنکھوں ہی آنکھوں میں تاڑ لے

    درد اپنا وہ نہیں کہ ٹٹولا کرے کوئی

    دل مضطرب نگاہ گرفتار شش جہت

    فرمائیے کدھر کا ارادہ کرے کوئی

    یادش بخیر یاد خدا آ ہی جاتی ہے

    اپنی طرف سے لاکھ بھلایا کرے کوئی

    اس کی نگاہ شوق کے قربان جائیے

    تجھ ایسے بے نشاں کو جو پیدا کرے کوئی

    طاعت ہو یا گناہ پس پردہ خوب ہے

    دونوں کا جب مزہ ہے کہ تنہا کرے کوئی

    بندے نہ ہوں گے جتنے خدا ہیں خدائی میں

    کس کس خدا کے سامنے سجدہ کرے کوئی

    حسن یگانہؔ آپ ہی اپنا حجاب ہے

    حسن حجاب دور سے دیکھا کرے کوئی

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے