کس کو دیکھا ہے یہ ہوا کیا ہے

اختر شیرانی

کس کو دیکھا ہے یہ ہوا کیا ہے

اختر شیرانی

MORE BYاختر شیرانی

    کس کو دیکھا ہے یہ ہوا کیا ہے

    دل دھڑکتا ہے ماجرا کیا ہے

    اک محبت تھی مٹ چکی یا رب

    تیری دنیا میں اب دھرا کیا ہے

    دل میں لیتا ہے چٹکیاں کوئی

    ہائے اس درد کی دوا کیا ہے

    حوریں نیکوں میں بٹ چکی ہوں گی

    باغ رضواں میں اب رکھا کیا ہے

    اس کے عہد شباب میں جینا

    جینے والو تمہیں ہوا کیا ہے

    اب دوا کیسی ہے دعا کا وقت

    تیرے بیمار میں رہا کیا ہے

    یاد آتا ہے لکھنؤ اخترؔ

    خلد ہو آئیں تو برا کیا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY