ماہ من شمع تمن دل کے شبستان میں آ

قربی ویلوری

ماہ من شمع تمن دل کے شبستان میں آ

قربی ویلوری

MORE BYقربی ویلوری

    ماہ من شمع تمن دل کے شبستان میں آ

    نور دیدہ ہو میری چشم کے ایوان میں آ

    بے نیازی سوں تیری جاں بلب آیا ہے مجھے

    چھوڑ کر طور جفا کچھ رہ احسان میں آ

    دل تو بے حال ہوا گوئی نمن سرگرداں

    زلف پر پیچ کے چوگان لے میدان میں آ

    سرو شمشاد و گل و لالہ اسی کا ہے ظہور

    دیکھنے اس کے ظہورات کوں بستان میں آ

    صورت لفظ و عبارات و معانی اندر

    جلوہ گر توں چہ ہوا ہے میرے دیوان میں آ

    سخت پردا ہے گماں دیدۂ دل پر قربیؔ

    دیک مکھ یار کا ہر جا رہ ایقان میں آ

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے