مانا کسی ظالم کی حمایت نہیں کرتے

عاصم واسطی

مانا کسی ظالم کی حمایت نہیں کرتے

عاصم واسطی

MORE BYعاصم واسطی

    مانا کسی ظالم کی حمایت نہیں کرتے

    ہم لوگ مگر کھل کے بغاوت نہیں کرتے

    کرتے ہیں مسلسل مرے ایمان پہ تنقید

    خود اپنے عقیدوں کی وضاحت نہیں کرتے

    کچھ وہ بھی طبیعت کا سکھی ایسا نہیں ہے

    کچھ ہم بھی محبت میں قناعت نہیں کرتے

    جو زخم دیے آپ نے محفوظ ہیں اب تک

    عادت ہے امانت میں خیانت نہیں کرتے

    کیوں ان کو ملا منصب افزائش گیتی

    یہ لوگ تو مٹی سے محبت نہیں کرتے

    کچھ ایسی بغاوت ہے طبیعت میں ہماری

    جس بات کی ہوتی ہے اجازت نہیں کرتے

    تنظیم کا یہ حال ہے اس شہر میں عاصمؔ

    بے ساختہ بچے بھی شرارت نہیں کرتے

    مأخذ :
    • کتاب : Ghazal Calendar-2015 (Pg. 16.08.2015)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY